ایف بی آر کا 5 بڑے شہروں میں ریٹیلرز پر ٹیکس لگانے کا فیصلہ

285

 

فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر ) نے پاکستان کے 5 بڑے شہروں میں ریٹیلرز پر ٹیکس لگانے کا پلان فیصلہ کیا ہے۔

ایف بی آر کی جانب سے ریٹیل سیکٹر کو ٹیکس نیٹ میں لا کر 300 ارب روپے اضافی ریونیو اکھٹا کرنے کا پلان تیار کیا گیا جس کے پہلے مرحلے میں ملک کے پانچ بڑے شہروں میں ریٹیلرز پر ٹیکس لگانے کی تجویز زیر غور ہے۔

حکام ایف بی آر کے مطابق ریٹیلرز پر ٹیکس لگانے سے ابتدائی طور پر 100 ارب روپے آمدن متوقع ہے  جبکہ اسلام آباد، کراچی، لاہور، پشاور اور کوئٹہ میں ریٹیلرز پر ٹیکس لگایا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق ملک میں 35 لاکھ ریٹیلرز پر ٹیکس لگانے کیلئے سکیم کو حتمی شکل دی جارہی ہے، پہلے مرحلے میں اسلام آباد اور چاروں صوبائی دارالحکومت کے ریٹیلرز پر ٹیکس لگایا جائے گا جبکہ اگلے مرحلے میں دیگر بڑے شہروں میں بھی ریٹیل سیکٹر کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی تجویز زیر غور ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دکان کے سائز اور سالانہ آمدن پر ٹیکس عائد کیا جائے گا جو کہ ماہانہ بنیاد پر اکٹھا کیا جائے گا۔

حکومت کی جانب سے گرین سگنل ملنے پر سکیم لانچ کر دی جائے گی، ریٹیلرزکی سالانہ آمدن پر تقریبا 10 سے فیصد زائد تک ایڈوانس ٹیکس عائد کیا جائےگا جبکہ اسکیم کے تحت تمام شعبوں سے منسلک کاروباروں اور افراد پر ٹیکس عائد کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان کو قرض کی فراہمی کے لیے ٹیکس نیٹ بڑھانے کی شرط عائد کر رکھی ہے اور ذرائع کا کہنا ہے کہ ریٹیلرز پر ٹیکس لگانے کا فیصلہ بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے۔

 

جواب چھوڑیں

Please enter your comment!
Please enter your name here